گرما گرم خبریں

نیشنل ہائی وے اینڈ موٹر وے پولیس سیکٹر نارتھ ٹو کی سالانہ ایوارڈ تقریب کا انعقاد
نیا پاکستان بنانے کیلئے پرعزم ہیں،چوہدری جاوید کوثر ایڈووکیٹ
پولیس پٹرولنگ پولیس ٹھاکرہ موڑ چوکی نے مختلف کاروائیوں میں چھ مقدمات درج
ضلع چکوال کی سیاست میں آنے والے چند دنوں میں بڑی سیاسی تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں
چوہدری زاہد جٹ نے اپنی برادری سمیت تحریک انصاف میں شامل ہونے کا اعلان کردیا
کمپیوٹرائزڈ لینڈریکارڈ سنٹر گوجرخان عوام کیلئے دردسر بن گیا
تحریک انصاف میں شمولیت پر راجہ حسیب کیانی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،رضوان ہاشمی

ضلع چکوال میں پی ٹی آئی بدترین اندرونی خانہ جنگی کا شکار ہے


ڈھڈیال ( ریاض بٹ)ضلع چکوال میں پی ٹی آئی بدترین اندرونی خانہ جنگی کا شکار ہے جس کی وجہ سے اسے اپنے امیدواروں کی نامزدگی اور متوقع نئے شامل ہونے والوں کی ایڈجسٹمنٹ میں مشکلات کا سامنا ہے ۔ ضلع کے قومی وصوبائی اسمبلی حلقوں میں تحریک انصاف کے ایک سے زائد امیدوار ٹکٹ کے حصول کے خواہشمند ہیں۔حلقہ این اے 64میں راجہ یاسر سرفرار ، چوہدری ایازامیر پی پی 21میں چوہدری علی ناصر بھٹی، چوہدری تیمور ایڈووکیٹ ، پی پی 22میں راجہ منوراحمد ، راجہ طارق افضل کالس ،ر اجہ ذوالفقار ڈلوال ، این اے 65میں سردار منصور حیات ٹمن، سردار فیض ٹمن ، پی پی23میں ملک اختر شہباز، فوزیہ بہرام،جوجی شاہ جبکہ129پی پی24میں کرنل سلطان سرخرواور ڈاکٹر مقصود ٹمن شامل ہیں جبکہ سردار گروپ کی پی ٹی آئی میں شمولیت کی صورت میں سردار غلام عباس خان ، سردار آفتا ب اکبر اور چوہدری اعجاز فرحت کو ضلع میں ایڈجسٹ کرنا ایک مشکل مرحلہ ہوگا۔حلقہ این اے 64میں چوہدری ایازا میر کے الیکشن میں حصہ لینے کی صورت میں سردار گروپ کی پی ٹی آئی میں شمولیت ناممکن ہوجائے گی۔ سردار غلام عباس اور راجہ یاسر سرفراز کے درمیان پس پردہ رابطوں کی گونج سنائی د ے رہی ہے لیکن راجہ یاسر سرفراز سردار گروپ سے رابطوں کی مسلسل تردید کررہے ہیں ۔ پی ٹی آئی شمالی پنجاب کی قیادت تمام آپشنز کھلے رکھ کر مسلم لیگ ن کے مقابلے میں ایسے امیدوار وں پر غور کررہی ہے جو ڈٹ کر ان کا مقابلہ کرسکیں۔ مسلم لیگ ن کا ضلع کے تمام حلقوں میں مضبوط سیٹ اپ ہے اور موجودہ پارلیمنٹرین کا مقابلہ کرنا پی ٹی آئی کیلئے کچھ آسان نہیں۔ مسلم لیگ ن کا ووٹ بینک محفوظ اور اپنے پارلیمنٹرین کے ساتھ ہے اور پی ٹی آئی میں نظر انداز کیے جانے والے امیدواروں کی بغاوت اور الیکشن میں عدم دلچسپی مسلم لیگ ن کیلئے فائدہ مند ثابت ہوگی۔سردارگروپ نے مسلم لیگ ن کو چھوڑنے کی خبروں کی تردید تو کی ہے لیکن پی ٹی آئی کے حلقے سردارگروپ کے پی ٹی آئی کے رہنماؤں کے ساتھ پس پرد ہ رابطوں کی تصدیق کررہے ہیں۔ ضلع چکوال میں مسلم لیگی ابھی تک بڑی خاموشی کے ساتھ تحریک انصاف کی سرگرمیوں پر نظر رکھے ہوئے ہیں اور لیگی پارلیمنٹرین مطمئن دکھائی دیتے ہیں کہ وہ 2018کے الیکشن میں تحریک انصاف اور دیگر سیاسی جماعتوں کو آسانی سے زیر کرلیں گے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: