گرما گرم خبریں

حکومتی دعوے دھرے کے دھرے، سحرو افطار میں لوڈشیڈنگ ،عوام بلبلا اُٹھے ، حکومت کو بددعائیں
منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈاؤن ،بدنام زمانہ منشیات فروش آصف عرف آصو بٹ ساتھیوں سمیت گرفتار
گو جر خان میں اندھیر نگری چوپٹ راج، سٹریٹ لائٹس خراب، پانی کی شدید کمی، تجاوزات کی بھرمار ، گندگی کے ڈھیر، بلدیہ تنخواہیں لینے کیلئے بنی ہے ؟؟
گوجرخان : الیکشن کمیشن میں زیرسماعت جعلی ڈگری کیس میں لیگی ایم پی اے حلقہ پی پی فور راجہ شوکت عزیز بھٹی نااہل
واپڈا اِن ایکشن، عدم ادائیگی بل کی بناء پر پاسپورٹ آفس گوجرخان کابجلی کنکشن کاٹ دیا گیا، عوام ذلیل و خوار
شہیدوں اور غازیوں کی دھرتی کا ایک اور سپوت شہادت کا درجہ پا گیا
سو کے وی کا ٹرانسفارمر نہیں لگ رہا ،واپڈا چیئرمین ،ایس ڈی او اور ایکسین کے خلاف عدالت میں دعویٰ دائر
گلیانہ موڑ گوجرخان موٹرسائیکل ورکشاپ میں آتشزدگی،سامان جل کر خاکستر ہوگیا

قصبہ دولتالہ میں گوجرنوالہ پولیس نے غریب محنت کش کے گھر دھاوہ بول دیا


دولتالہ(نامہ نگار )قصبہ دولتالہ میں گوجرنوالہ پولیس نے غریب محنت کش کے گھر دھاوہ بول دیا چادر اور چاردیوری کا تقدس پامال کرتے ہوئے محنت کش محمود حسین کے گھر چھاپہ مزاحمت پر عورتوں اور بچوں پر تشدداطلاع ملتے ہی پولیس گردی کے خلاف سینکڑوں لوگ جمع ہوگے پولیس کے خلاف زبر دست احتجاج نعرہ بازی کئی سالوں سے گوجرنوالہ پولیس حقائق جانتے ہوئے بھی مجھے انتقامی کاروائیوں کا نشانہ بنارہی ہے وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان ،آئی جی پنجاب مجھے انصاف دیں متاثرہ خاندان کی اپیل تفصیلات کے مطابق حسینہ بیگم زوجہ شیخ محمود حسین قوم شیخ پولیس چوکی دولتالہ کو درخواست دیتے ہوئے بتایا کہ میں اپنے بچوں کے ہمراہ گھر میں افطاری کر رہی تھی کہ اسی اثناء میں گھر کا دروازہ ٹوٹنے کی آواز آئی دیکھا تو رضوان ولد محمد سلیم مسلح پسٹل ،نظام الدین ولد چاند علی مسلح کلہاڑی ،محمد سلیم ولد سرادر علی مسلح ڈنڈا،اوت دیگر 2نامعلوم افراد مسلح پسٹل گھر کے اندر زبردستی داخل ہو ئے جنہوں نے آتے ہی مجھے اور میرے جوان سال بیٹے بیٹیوں کو لاتوں مکوں اور تھپروں سے مارانا شروع کر دیا چیخ و پکار کی آواز سن کر مسجد مہاجرین سے نمازی دوڑے آئے جنہوں نے بمشکل ہماری جان چھڑائی اسی اثناء میں3مسلح یونیفارم پولیس بھی اندر داخل ہو ئے اور ہمیں بتایا کہ احمد نگر تھانہ سے آئے ہیں کہ محمود وغیرہ کی تلاشی لینی ہے اس دوران مقامی افراد بڑی تعداد میں آ گئے اور مقامی پولیس کو اطلاع دی اور رضوان ،نظام ،اور سلیم وغیرہ کو جاتلی پولیس نے گرفتار کر لیا وجہ عناد محمد سلیم کے لڑکے نے ہماری بیٹی کو طلاق دی جس کا فیملی کورٹ سے ہمارے حق میں ڈگری فیصلہ ہوا ہے اوریہ ہمارے خلاف جھوٹے مقدمات درج کر کے ہمیں تنگ کر رہے ہیں درج بالا افراد زبردستی بمعہ پولیس ہمارے گھر داخل ہو ئے چادرو چار دیواری کا تقدس پامال کیا اور ہمیں تشدد کا نشانہ بنایا تا ہم پولیس تا حال مقدمہ درج کرنے میں لیت و لعل سے کام لے رہی ہے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: