گرما گرم خبریں

نیشنل ہائی وے اینڈ موٹر وے پولیس سیکٹر نارتھ ٹو کی سالانہ ایوارڈ تقریب کا انعقاد
تحریک انصاف میں شمولیت پر راجہ حسیب کیانی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،رضوان ہاشمی
پولیس پٹرولنگ پولیس ٹھاکرہ موڑ چوکی نے مختلف کاروائیوں میں چھ مقدمات درج
ضلع چکوال کی سیاست میں آنے والے چند دنوں میں بڑی سیاسی تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں
چوہدری زاہد جٹ نے اپنی برادری سمیت تحریک انصاف میں شامل ہونے کا اعلان کردیا
کمپیوٹرائزڈ لینڈریکارڈ سنٹر گوجرخان عوام کیلئے دردسر بن گیا
نیا پاکستان بنانے کیلئے پرعزم ہیں،چوہدری جاوید کوثر ایڈووکیٹ

محرم الحرام میں ہماری اجتماہی ذمہ داریاں

تحریر۔۔۔طارق نجمی

محرم الحرام کی آمد آمد ہے. نواسۂ رسول صلعم اور جگر گوشۂ بتول کے غم میں ہر طرف مجالس برپا ہوں گی. ملک کی موجودہ کشیدہ صورتِ حال کے پیشِ نظر ہمیں بہت سا محتاط رہنا پڑے گا اور اپنے چاروں طرف نظر رکھنی پڑے گی. انتظامیہ کی طرف سے کئے گئے انتظامات کے علاوہ ہمیں انفرادی اور اجتماہی طور پر بھی اپنا کردار ادا کرنا پڑے گا.جس طرح مجالس اور جلوس کے دوران انتظامیہ اپنے قوانین کی پابندی کرواتی ہے اسی طرح خود انتظامیہ کو بھی ان قوانین کا پابند ہونا چاہیے اور جلوس و مجالس کے دوران اپنی موجودگی کو یقینی بنانا چاہیے.چک راجگان میں بھی ہر سال محرم الحرام میں مجالس و جلوس کا سلسلہ جاری رہتا ہے لیکن آج تک ضلعی انتظامیہ کی طرف سے کسی اعلی قیادت نے انتظامی امور کا جائزہ لینے کے لئے دورہ نہیں کیا. یہ انتہائی دکھ کی بات ہے حالانکہ علاقائی ایس ایچ او صاحب, ڈی ایس پی صاحب, بلدیہ گوجرخان, اے سی صاحب اور تحصیل دار صاحب کو خود آ کر انتظامی امور کا جائزہ لینا چاہیے.اہلیانِ چک راجگان کی طرف سے رضاکارانہ طور پر انتظامی امور پر کڑی نظر رکھی جاتی ہے اور ہمارے نوجوان ہر معاملے میں انتظامیہ کے ساتھ مکمل تعاون کرتے ہیں. مگر کسی قسم کے نا خوشگوار واقعے سے نِپٹنے کے لئے ہمارے رضاکار بالکل خالی ہاتھ ہوتے ہیں اور ایسی صورت میں ہم صرف ہنگامی حالات کا استقبال ہی کر سکتے ہیں. خدا نخواستہ ایسے حالات میں اگر کوئی ایسی ویسی بات ہوتی ہے تو اس کی ذمہ داری مکمل طور پر ضلعی انتظامیہ اور حکومتِ پنجاب پر ہو گی.اس طرح بلدیہ گوجرخان کی بھی ذمہ داری بنتی ہے کہ امام بارگاہ اور ملحقہ گلیوں کی صفائی میں ہمارے ساتھ معاونت کریں. زیادہ رش ہو جانے کی وجہ سے بعض اوقات گٹر ابل پڑتے ہیں , ایسی صورت حال میں بلدیہ اپنے ذرائع سے صفائی کا انتظام کرے تاکہ لوگوں کو زحمت نہ اٹھانی پڑے محکمہ 1122 پر بھی ذمہ داری عائد ہوتی ہے کہ یکم محرم سے دس محرم تک ہمارے ساتھ رابطے میں رہیں اور ایمرجینسی کی صورت میں ہمارے ساتھ تعاون کریں سب سے اہم مسئلہ میڈیکل کے شعبے کا ہے. سات محرم سے دس محرم تک جو زنجیر زنی ہوتی ہے اس کے بعد زخمیوں کی دیکھ بھال اور مرہم پٹی کے لئے ضلعی انتظامیہ کی طرف سے کوئی بھی سہولت میسر نہیں ہے. گو کہ ہم نے اپنی طرف سے ڈاکٹر مبارک صاحب اور ڈاکٹر قمر صاحب کے بھرپور تعاون سے ایک نظام وضع کیا ہے جس کے تحت اس پورے عرصے میں نہ صرف ایمرجنسی مریضوں کا علاج معالجہ ہوتا ہے بلکہ معمول کے مریضوں کے علاج کی بھی سہولت موجود ہوتی ہے. استعمال ہونے والی تمام دواؤں کا ذخیرہ ہمارے ہاں موجود ہوتا ہے. مریضوں کو بالکل فری ادویات کی فراہم کی جاتی ہیں. گاؤں میں سرکاری ڈسپنسری ہونے کے باوجود عملے کی غفلت کی وجہ سے ہمارے لئے بے فائدہ ہوتی ہے محکمہ صحت سے ہم اہلیانِ چک راجگان کی اپیل ہے کہ دورانِ زنجیر زنی, زخمی ہونے والے ماتمیوں کے لئے یہاں ایک فری میڈیکل کیمپ لگایا جائے جس میں معاون عملے کے علاوہ ایک ,ایم بی بی ایس ڈاکٹر کی تقرری بھی کی جائے. اس کے علاوہ ایک ایمبولینس ہمہ وقت یہاں موجود رہنی چاہئے.موجودہ مخدوش حالات کے پیشِ نظر اہلیانِ چک راجگان کا مکمل تعاون انتظامیہ کے ساتھ رہے گا. ہمیں مل جل کر حالات کا مقابلہ کرنا ہے تاکہ خدا نخواستہ کوئی نا خوشگوار واقعہ پیش نہ ہو۔۔۔… ربِ ذوالجلال ہم سب کو اپنی امان میں رکھے

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: