گرما گرم خبریں

نیشنل ہائی وے اینڈ موٹر وے پولیس سیکٹر نارتھ ٹو کی سالانہ ایوارڈ تقریب کا انعقاد
ضلع چکوال کی سیاست میں آنے والے چند دنوں میں بڑی سیاسی تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں
کمپیوٹرائزڈ لینڈریکارڈ سنٹر گوجرخان عوام کیلئے دردسر بن گیا
نیا پاکستان بنانے کیلئے پرعزم ہیں،چوہدری جاوید کوثر ایڈووکیٹ
تحریک انصاف میں شمولیت پر راجہ حسیب کیانی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،رضوان ہاشمی
چوہدری زاہد جٹ نے اپنی برادری سمیت تحریک انصاف میں شامل ہونے کا اعلان کردیا
پولیس پٹرولنگ پولیس ٹھاکرہ موڑ چوکی نے مختلف کاروائیوں میں چھ مقدمات درج

مقدس اوراق کا احترام 

نبیل گورسی

ngorsi8@gmail.com

ﭼﮭﻭﭨﮯ ﺏﮍﮮ ﭘﯿﻣﺎﻥﮯ ﭘﺭ ﺭﻭﺯﻣﺮﮦ ﺯﻧﺪﮔﯽ ﻡﯿﮟ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮨﻭﻥﮯ ﻭﺍﻝﯽ ﺍﺵﯿﺍء ﺑﺎﻟﺨﺼﻮﺹ ﺍﺵﯿﺍﺉﮯ ﺧﻮﺭﺩﻭﻧﻮﺵ ﮐﯽ ﭘﯿﮑﻥﮓ ﮐﮯ ﻟﺊﮯ ﺍﺧﺒﺎﺭﺍﺕ
ﮐﻭ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﯿﺍ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ۔ ﺍﻥ ﺍﺵﯿﺍء ﮐﯽ ﻑﮩﺭﺳﺖ ﺍﺗﻦﯽ ﻃﻮﯾﻝ ﮨﮯ ﮐﮧ ﻡﯿﮟ ﻡﮑﻣﻞ ﻃﻮﺭ ﭘﺭ ﮔﻭﺵ ﮔﺯﺍﺭ ﮐﺭﻥﮯ ﺱﮯ ﻗﺎﺻﺮ ﮨﻭﮞ۔ ﺁﭖ ﮐﯽ ﺗﻮﺝﮧ ﺍﯾﮏ ﺍﮨﻡ ﺍﻭﺭ ﺣﺴﺎﺱ ﻣﻮﺿﻮﻉ ﮐﯽ ﻃﺮﻑ ﻣﺒﺬﻭﻝ ﮐﺭﻭﺍﻧﺎ ﭼﺍﮨﺗﺎ ﮨﻭﮞ۔ ﮨﻣﺎﺭﮮ ﻣﻌﺎﺷﺮﮮ ﻡﯿﮟ ﺩﮐﺍﻧﺪﺍﺭ ﺍﻭﺭ ﭘﮭﯿﺭﯼ ﻭﺍﻝﮯ ﺍﭘﻥﯽ ﺍﺵﯿﺍء ﮐﻭ ﺩﮐﺍﻧﻮﮞ ﺍﻭﺭ ﭼﮭﺍﺏﮍﯾﻭﮞ ﭘﺭ ﺳﺠﺎﻥﮯ ﮐﯿﻟﺊﮯ ﺍﺧﺒﺎﺭﺍﺕ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﺭﺕﮯ ﮨﯿﮟ ﺍﻭﺭ ﺍﺳﺘﻌﻤﺎﻝ ﮐﮯ ﺑﻌﺪ ﭘﺭﺍﻥﮯ ﺍﺧﺒﺎﺭﺍﺕ ﮐﻭ ﺱﮍﮐﻭﮞ ﯾﺍ ﮐﻭﮌﮮ ﺩﺍﻧﻮﮞ ﻡﯿﮟ ﭘﮭﯿﻥﮏ ﺩﯾﺕﮯ ﮨﯿﮟ ﺟﺐﮑﮧ ﺍﻥ ﺍﺧﺒﺎﺭﺍﺕ ﻡﯿﮟ ﻗﺮﺁﻥﯽ ﺁﯾﺍﺕ ﺍﻭﺭ ﺍﺣﺎﺩﯾﺙ ﻝﮑﮭﯽ ﮨﻭﺕﯽ ﮨﯿﮟ ﻣﺨﺘﻠﻒ ﻓﻼﺡﯽ ﺗﻨﻆﯿﻡﯿﮟ ﺏﮭﯽ ﻣﺬﮨﺏﯽ ﺕﮩﻭﺍﺭ ﻉﯿﺩﺍﻻﺿﺢﯽ ﺍﻭﺭ ﻉﯿﺩﺍﻟﻔﻄﺮ ﭘﺭ ﺯﮐﻭۃ ﮐﮯ ﺣﺼﻮﻝ ﮐﮯ ﻟﺊﮯ ﭼﮭﭙﻥﮯ ﻭﺍﻝﮯ ﺏﯿﻧﺮﺯ ﯾﺍ ﺍﺷﺖﮩﺍﺭﺍﺕ ﭘﺭ ﻗﺮﺁﻥﯽ ﺁﯾﺍﺕ ﺍﻭﺭ ﺍﺣﺎﺩﯾﺙ ﭼﮭﭙﻭﺍﺕﯽ ﮨﯿﮟ ﺟﻦﮩﯿﮟ ﺑﻌﺪﺍﺯﺍﮞ ﺭﺍﺳﺘﻮﮞ ﭘﺭ ﯾﺍ ﮐﻭﮌﮮ ﺩﺍﻧﻮﮞ ﻡﯿﮟ ﺩﯾﮑﮭﺍ ﺟﺎﺗﺎ ﮨﮯ۔ ﮔﺯﺍﺭﺵ ﮨﮯ ﮐﮧ ﺟﻮ ﺡﮑﻭﻣﺖﯽ ﺍﻭﺭ ﭘﺭﺍﺉﯿﻭﯾﭧ ﺍﺩﺍﺭﮮ ﺍﺳﻼﻡﯽ ﻋﻠﻮﻡ ﮐﯽ ﺗﺮﻭﯾﺝ ﺍﺷﺎﻋﺖ ﮐﮯ ﻟﺊﮯ ﮐﺍﻡ ﮐﺭ ﺭﮨﮯ ﮨﯿﮟ‘ ﺍﻥ ﮐﻭ ﯾﮧ ﺫﻡﮧ ﺩﺍﺭﯼ ﺏﮭﯽ ﺗﻔﻮﯾﺽ ﮐﯽ ﺟﺎﺉﮯ ﮐﮧ ﻭﮦ ﻣﺨﺘﻠﻒ ﺍﺧﺒﺎﺭﺍﺕ‘ ﻣﺠﻞﮯ ﺍﻭﺭ ﺏﯿﻧﺮﺯ ﭘﺭ ﻗﺮﺁﻥﯽ ﺁﯾﺍﺕ ﺍﻭﺭ ﺍﺣﺎﺩﯾﺙ ﮐﯽ ﭼﮭﭙﺍﺉﯽ ﮐﮯ ﻋﻤﻞ ﮐﻭ ﺭﻭﮐﯿﮟ ﺗﺎﮐﮧ ﺍﻥ ﮐﯽ ﺏﮯ ﺣﺮﻣﺖﯽ ‘ﻥﮧ ﮨﻭ ﺱﮑﮯ۔ ﻣﺢﮑﻡﮧ ﺍﻭﻗﺎﻑ ﺍﺳﻼﻡﯽ ﻧﻈﺮﯾﺍﺕﯽ ﮐﻭﻧﺴﻞ ﮐﮯ ﺍﺭﮐﺍﻥ ﻣﺴﺌﻞﮯ ﮐﯽ ﺍﮨﻡﯿﺕ ﮐﻭ ﺍﺟﺎﮔﺭ ﮐﺭﯾﮟ۔

 

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: