گرما گرم خبریں

سو کے وی کا ٹرانسفارمر نہیں لگ رہا ،واپڈا چیئرمین ،ایس ڈی او اور ایکسین کے خلاف عدالت میں دعویٰ دائر
گلیانہ موڑ گوجرخان موٹرسائیکل ورکشاپ میں آتشزدگی،سامان جل کر خاکستر ہوگیا
حکومتی دعوے دھرے کے دھرے، سحرو افطار میں لوڈشیڈنگ ،عوام بلبلا اُٹھے ، حکومت کو بددعائیں
واپڈا اِن ایکشن، عدم ادائیگی بل کی بناء پر پاسپورٹ آفس گوجرخان کابجلی کنکشن کاٹ دیا گیا، عوام ذلیل و خوار
منشیات فروشوں کے خلاف کریک ڈاؤن ،بدنام زمانہ منشیات فروش آصف عرف آصو بٹ ساتھیوں سمیت گرفتار
گوجرخان : الیکشن کمیشن میں زیرسماعت جعلی ڈگری کیس میں لیگی ایم پی اے حلقہ پی پی فور راجہ شوکت عزیز بھٹی نااہل
گو جر خان میں اندھیر نگری چوپٹ راج، سٹریٹ لائٹس خراب، پانی کی شدید کمی، تجاوزات کی بھرمار ، گندگی کے ڈھیر، بلدیہ تنخواہیں لینے کیلئے بنی ہے ؟؟
شہیدوں اور غازیوں کی دھرتی کا ایک اور سپوت شہادت کا درجہ پا گیا

موت ایک اٹل حقیقت

تحریر :طارق نجمی
موت ایک اٹل حقیقت ہے.ہر ذی روح کوایک نہ ایک دن اس جہانِ فانی سے جانا ہوتا ہے.یہی نظامِ قدرت ہے. لیکن بعض لوگ اپنے پیچھے ایسی یادیں چھوڑ جاتے ہیں کہ ہر وقت ان کے ساتھ گزرا ہوا وقت یا ان کی باتیں ذہن میں رہتی ہیں اور بے چین کرتی ہیں.ایسی ہی ایک شخصیت چند دن قبل ایک روڈ ایکسیڈنٹ میں فوت ہو جانے والے حافظ بہرام قاسم کی ہے. یہ نوجوان اپنی ذات میں ایک انجمن تھا. ہر کسی کا دوست,ہر کسی کا ہمدرد. اگر دینی مدرسے میں گیا تو حافظِ قرآنِ پاک بن کر نکلا.اور اگر کھیل کے میدان میں گیا تو کک باکسنگ چیمپن بن کر نکلا. اور بہت سے مقابلوں میں گولڈ میڈل جیتا. غرض یہ کہ جس فیلڈ میں بھی گیا اپنی مختصر سی عمر میں اس نے اپنا نام کمایاگزشتہ کچھ عرصے سے وہ گوجرخان میں واقع پیزا ہٹ میں ڈیلیوری بواے کی حیثیت سے کام کر رہا تھا. اپنے اس شعبے میں بھی اپنے اخلاق کی بدولت وہ لوگوں کے دل پر حکمرانی کرتا رہا اپنے ساتھیوں کو جب بھی کوء4 ی پریشانی یا مشکل پیش آء4 ی بہرام خان اپنی ضروریات کو بھول کر ان کی مدد اور دلجوء4 ی کرتا رہا جنازے کے بعد کتنے ہی لوگ آٰء4 ے اور لی ہوء4 ی ادھار کی رقم لوٹانے کی کوشش کی.کہ فلاں موقع پر بہرام بھاء4 ی نے ہماری مدد کی تھی اور آج ہم لوٹانا چاہتے ہیں. لیکن آفرین ہے بھڑے بھاء4 ی پر جس نے یہ کہہ کر سب کو رقم لوٹا دی کہ یہ رقم اپنے ہاتھ سے کسی مسجد میں بطور چندہ دے دیں تاکہ بہرام کی روح کو تسکین ملے اور صدقہء4 جاریہ کا ایک سلسلہ شروع رہے. راقم الحروف کے دونوں بیٹے بہرام کے قریبی دوستوں میں سے تھے. بڑا بیٹا ذیشان مہدی سعودی عرب میں بہرام کے ایکسیڈینٹ کی خبر سن کر بے چین ہے اور چھوٹا بیٹا فیضان نجمی دن میں کء کء بار ان کے گھر جا کر بہرام کی والدہ کی دلجوء کرنے کی کوشش کر رہا ہے. ساتھیوں سے بات ہوء تو انہوں نے بتایا کہ حسبِ معمول ہم سب نے مل کر سحری کی پھر نماز پڑھنے کے لء4 ے قریبی مسجد میں چلے گء4 ے.وہاں سے واپسی پر جی ٹی روڈ پر چڑھتے ہی ایک تیز رفتار ٹرک کی زد میں آ کر دو ساتھی بہرام قاسم اور عثمان موقع پر ہی ہلاک ہو گء4 ے. دوسری موٹر ساء4 یکل پر سوار ان کے دوسرے ساتھیوں نیان کی لاشوں کو ٹرک کے نیچے سے نکالا.اور ہسپتال پہنچایا. بہرام کے جنازے پر علاقے کے ہزاروں نوجوان شریک تھے اور بیشتر دھاڑیں مار مار کر رو رہے تھے جس نوجوان نے اپنی زندگی اتنی شان سیگزاری اس کی موت پر لوگوں کا اس قدر ہجوم اور ساتھیوں کی شمولیت اس کے لء4 ے ایک خراجِ تحسین تھی آخر میں دعا ہے کہ خدا وندِ عالم بہرام کے بھاء4 یوں کو اور خصوصآ اس کی والدہ کو صبرِ جمیل عطا کرے اور بہرام قاسم کوجنت الفردوس میں آعلی مقام عطا کرے…آمین ثم آمین.

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: