گرما گرم خبریں

چوہدری زاہد جٹ نے اپنی برادری سمیت تحریک انصاف میں شامل ہونے کا اعلان کردیا
ضلع چکوال کی سیاست میں آنے والے چند دنوں میں بڑی سیاسی تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں
نیشنل ہائی وے اینڈ موٹر وے پولیس سیکٹر نارتھ ٹو کی سالانہ ایوارڈ تقریب کا انعقاد
تحریک انصاف میں شمولیت پر راجہ حسیب کیانی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،رضوان ہاشمی
پولیس پٹرولنگ پولیس ٹھاکرہ موڑ چوکی نے مختلف کاروائیوں میں چھ مقدمات درج
کمپیوٹرائزڈ لینڈریکارڈ سنٹر گوجرخان عوام کیلئے دردسر بن گیا
نیا پاکستان بنانے کیلئے پرعزم ہیں،چوہدری جاوید کوثر ایڈووکیٹ

گو جر خان میں گیس اور بجلی کی بندش نے روزہ داروں کی زندگیاں اجیرن کر دیں

گو جر خان(نامہ نگار)گو جر خان میں گیس اور بجلی کی بندش نے روزہ داروں کی زندگیاں اجیرن کر دیں ۔گذشتہ شب حکومت کے خا تمے کی ساتھ ہی رات 12بجے بجلی بند ہو گئی اور سحری کے وقت گیس بند ہو گئی گو جر خان کے لیے گذشتہ دو دنوں سے گیس کا پریشر نصف سے بھی کم کر دیا گیا ہے جس سے رو زہ داروں کے چو لہے بجھ گئے ہیں گیس کا پریشر جمعہ کو سارا دن انتہائی کم رہا اور بجلی سارا دن بند ہو تی رہی حتی کہ نماز جمعہ کے دوران بھی بجلی بند رہی جس سے نما زیوں کو شدید مشکلات کا سامنا کر نا پڑا۔ادھر بلدیہ گو جر خان کے کونسلرز مرزا عرفان،چو ہدری محمد رشید اور خواجہ مظہر اقبال نے بجلی و گیس بندش کی شدید مذمت کرتے ہو ئے کہا ہے کہ یہ گو جر خان کے عوام کے ساتھ سخت زیادتی ہے انہوں نے کہا کہ ایک طرف سورج آگ بر سا رہا ہے اور درجہ حرارت 42تک جا پہنچا ہے دوسری طرف جی ایم گیس کے حکم پر گو جر خان میں گیس کا پریشر انتہائی کم کر دیا گیا ہے جس سے پتہ چلتا ہے کہ بحرانوں کی ذمہ دار حکو متیں نہیں ایسے افسران ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہما رے گو جر خان سے نکلنے والی گیس اسلام آ باد ، مری اور روات کو پو رے پریشر کے ساتھ مہیا کی جا رہی ہے مگر ہما رے لیے اسکا حصول مشکل بنا دیا گیا ہے انہوں نے کہا کہ ہم بلدیہ کے اجلاس میں جی ایم گیس کے خلاف ایک قرار داد لا رہے ہیں اور ایک بڑے مظاہرے کے لیے شہری تنظیموں سے را بطے کر رہے ہیں انہوں نے وزارت گیس کے حکام سے مطالبہ کیا کہ وہ تحقیقات کریں کہ گو جر خان میں اس موسم میں گیس کا پریشر کیوں کم کر دیا گیا ہے اور پریشر کم کرنے کے لیے خصوصی ٹیم کیوں تشکیل دی گئی ہے گو جر خان کے ساتھ یہ امتیازی سلوک کسی صورت قبول نہیں ہے ۔

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

error: