گرما گرم خبریں

کمپیوٹرائزڈ لینڈریکارڈ سنٹر گوجرخان عوام کیلئے دردسر بن گیا
پولیس پٹرولنگ پولیس ٹھاکرہ موڑ چوکی نے مختلف کاروائیوں میں چھ مقدمات درج
تحریک انصاف میں شمولیت پر راجہ حسیب کیانی کو خراج تحسین پیش کرتے ہیں،رضوان ہاشمی
چوہدری زاہد جٹ نے اپنی برادری سمیت تحریک انصاف میں شامل ہونے کا اعلان کردیا
نیشنل ہائی وے اینڈ موٹر وے پولیس سیکٹر نارتھ ٹو کی سالانہ ایوارڈ تقریب کا انعقاد
نیا پاکستان بنانے کیلئے پرعزم ہیں،چوہدری جاوید کوثر ایڈووکیٹ
ضلع چکوال کی سیاست میں آنے والے چند دنوں میں بڑی سیاسی تبدیلیاں رونما ہورہی ہیں

Archive for: January 25th, 2018

4ماہ قبل چوری ہونے والے موٹرسائیکل کیFIRتک درج نہ ہو سکی


دولتالہ(نامہ نگار) 4ماہ قبل چوری ہونے والے موٹرسائیکل کیFIRتک درج نہ ہو سکی ،دولتالہ میں چوروں کی چھوٹی بڑی لا تعداد وارداتیں،دوکانوں سے چھوٹی بڑی اشیاء چرانا ،سائیکل ،موٹرسایکل چرانا معمول کی بات بن گیا ،پولیس کی عدم توجہ کے باعث چوروں کے حوصلے بلند ہو چکے ہیں،تفصیلات کے مطابق غربی گوجرخان کے تجارتی مرکز دولتالہ میں چوری کی وارداتیں عام ہو چکی ہیں بازاروں سے روزانہ چھوٹی بڑی اشیاء کی چوری بھی معمول بن چکی ہے ،دولتالہ کے رہائشی نوریز انجم کیانی کا کہنا ہے کہ 4ماہ قبل اس کی ہنڈا125موٹر سائیکل نمبرRIM 4887عاشق مارکیٹ دولتالہ سے چوری ہوئی جس کی اطلاع پولیس چوکی دولتالہ کو دی گئی جس پر پولیس نے رپٹ درج کرلی مگر4ماہ گزرجانے کے بعد بھی ایف آئی آر تک درج نہ ہو سکی چوروں کی سرکوبی دور کی بات ہے ،واضح رہے کہ بازاروں میں نقب زنی کی وارداتوں ،موٹر سائیکل سمیت دیگر قیمتی اشیاء کی چوری کی واقعات تواتر کیساتھ رونما ہو رہے ہیں مگر پولیس رپٹ درج کرنے کے بعد کسی قسم کی کاروائی عمل میں نہیں لاتی اور زیادہ تر وارداتوں کی ایف آئی آر تک درج نہیں ہوتی جس کی وجہ سے نہ صرف عوام اپنی قیمتی اشیاء سے محروم ہو کر عدم تحفظ کا شکار ہو رہے ہیں بلکہ چوروں ،ڈاکوؤں کے حوصلے بھی بلند ہو رہے ہیں ،عوامی حلقوں نے اعلیٰ پولیس حکام سے نوٹس لیکر اصلاح احوال کا مطالبہ کیا ہے

راجہ خضر شہزاد رشتہ ازواج میں منسلک ہو گئے


دولتالہ(نامہ نگار)یونین کونسل آہدی کے گاؤں کاک کی معروف سماجی شخصیت راجہ محمد یونس کے فرزند ارجمند راجہ خضر شہزاد رشتہ ازواج میں منسلک ہو گئے ،دعوت ولیمہ میں سیاسی و سماجی شخصیات کی بھر پور شرکت ،جن میں چہرمین محمد خان بھٹی ،راجہ رضوان ،راجہ عامر،راجہ وسیم ،راجہ اشتیاق ،راجہ نوید ،راجہ ندیم کے علاوہ صحافی برادری نے شرکت کی

ضلع چکوال کی سیاست میں ان دنوں اگر کوئی بحث اور دلچسپی کا موضوع ہے تو وہ این اے ساٹھ کا ٹکٹ ہے


ڈھڈیال(ریاض بٹ سے)ضلع چکوال کی سیاست میں ان دنوں اگر کوئی بحث اور دلچسپی کا موضوع ہے تو وہ این اے ساٹھ کا ٹکٹ ہے جس کے لیے ممبر قومی اسمبلی میجر(ر) طاہر اقبال اور سابق ضلع ناظم سردار غلام عباس خان دعویدار ہیں۔ 85ء سے غیر جماعتی الیکشن سے لے کر2013ء کے عام انتخابات تک اگر اس حلقہ کے عوام اور مسلم لیگیوں کی سوچ کا اندازہ لگایا جائے تو یہ ہمیشہ سے اینٹی سردار ،اینٹی پیپلزپارٹی اور ایک مسلک کے خلاف رہا ہ ے۔ اسے اتفاق سمجھیں کہ اس حلقہ سے ہمیشہ اسی مخالف مسلک کا امیدوار مسلم لیگ ن کے مدمقابل آیا جس کی وجہ سے تحریک خدام اہلسنت والجماعت نے کھل کر مسلم لیگ ن کی حمایت کی اور اس کی کامیابیوں میں حصہ ڈالا۔1993ء کے عام انتخابات میں ایک سیاسی چال چلی گئی اور منصوبہ بندی کے تحت سیاسی دو شخصیات سفید ٹوپی کا سہارا لے کر امیر تحریک خدام اہلسنت مولانا قاضی مظہر حسین کی قربت حاصل کی اور مسلم لیگ ن کے خلاف بھڑکا کر راجہ ثناء الحق کی حمایت کرا دی، اس سازش کا مقصد یہ تھا کہ تحریک خدام اہلسنت کا ووٹ مسلم لیگ ن کو پول نہ ہو سکے، تحریک کے حامیوں نے اس سازش کو بھی ناکام بناتے ہوئے مسلم لیگ ن کو ووٹ دے کر اس کی کامیابی یقینی بنائی، امیر تحریک کے حمایت سے دو ماہ قبل ہی سازشی عناصر نے کہنا شروع کر دیاتھا کہ اس مرتبہ دیکھیں گے کہ مسلم لیگ ن کیسے تحریک خدام اہلسنت کی حمایت حاصل کرتی ہے لیکن اس الیکشن میں بھی سردار اشرف خان مسلسل چوتھی مرتبہ لیفٹیننٹ جنرل(ر) عبدالمجید ملک سے شکست کھا گئے۔ یہی صورتحال2013ء کے عام انتخابات سے قبل بھی دیکھنے میں آئی جب سردار گروپ کے حامیوں نے یہ کہنا شروع کر دیا کہ ٹکٹ سردار غلام عباس کو ملے گا حالانکہ اس وقت وہ مسلم لیگ ن میں شامل بھی نہیں ہوئے تھے۔ اعلیٰ سطح پر کیا کھینچا تانی ہوئی لیکن ٹکٹ میجر(ر) طاہر اقبال کو بھی ملا۔ اب پھر وہی صورتحال سامنے آ رہی ہے۔عوام کو حلقہ این اے ساٹھ اور اس کے نتائج کے بارے میں ابھی آگاہ کرنا ضروری ہے تاکہ ان کے شکوک و شبہات دور ہو سکیں اور جو دعوے کیے جاتے ہیں ان کی حقیقت بھی کھل کر سامنے آ جائے۔85ء کے غیر جماعتی انتخابات میں جنرل عبدالمجید ملک نے53469لے کر اپنے مدمقابل سردار اشرف خان(41549)کو88میں جنرل عبدالمجید ملک نے اسلامی جمہوری اتحاد کے پلیٹ فارم سے 61621مدمقابل سردار اشرف خان(60902) ،90میں جنرل عبدالمجید ملک نے79873مدمقابل سردار اشرف خان(60902) اور1993میں جنرل عبدالمجیدملک نے77483ووٹ لے کرپیپلزپارٹی کے سردار اشرف خان(67001) کو مسلسل چوتھی مرتبہ شکست سے دوچارکیا۔1997ء کے انتخابات میں جنرل عبدالمجید ملک نے84900ووٹ لے کر پیپلزپارٹی کے راجہ منور احمد(32293) کو شکست دی،2002ء کے الیکشن میں میجر(ر) طاہر مسلم لیگ ق کے ٹکٹ پر72331ووٹ لے کر کامیاب ہوئے۔ جبکہ ان کے مدمقابل مسلم لیگ ن کے چوہدری ایاز امیر(70080) تھے۔2008ء کے عام انتخابات میں مسلم لیگ ق نے ٹکٹ میجر طاہر اقبال کو دیا لیکن اس وقت ضلع ناظم چکوال سردار غلام عباس نے اپنے بھائی سردار محمد نواب خان کو آزاد امیدوار کھڑا کر دیا۔ اس کے جواب میں جنرل عبدالمجید ملک نے سیاسی بصیرت کا مظاہرہ کرتے ہوئے میجر (ر) طاہر اقبال کا ق لیگ کا ٹکٹ واپس کر کے مسلم لیگ ن کے نامزد امیدوار چوہدری ایاز امیر کی غیر مشروط حمایت کا اعلان کر دیا۔ ایاز امیر نے125437ووٹ لے کر اپنے مدمقابل ضلع ناظم سردار غلام عباس کے حمایت یافتہ ان کے بھائی سردار نواب خان کو(91255) کو شکست دی۔ 2013ء کے الیکشن میں میجر (ر) طاہر اقبال کو مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت نے پندرہ اپریل کو ٹکٹ دینے کا اعلان کیا اور صرف ستائیس دن کی رابطہ مہم میں انہو ں نے اپنے مدمقابل آزاد امیدوار سردار غلام عباس(100827) کو130821ووٹ لے کر شکست سے دوچار کیا۔گزشتہ دس عام انتخابات کے نتائج سے بخوبی اندازہ لگایا جا سکتا ہے کہ اس حلقہ کے عوام نے کبھی بھی سردار گروپ اور مخالف مسلک کے امیدوار کو کبھی قبول نہیں کیا۔ اب بھی اس حلقہ میں یہی صورتحال درپیش ہے۔ جہاں ممبر قومی اسمبلی میجر(ر) طاہر اقبال اور سابق ضلع ناظم سردار غلام عباس مسلم لیگ ن کے ٹکٹ کے امیدوار ہیں۔ ضلع کے تمام قومی و صوبائی حلقوں کے امیدواروں کی تبدیلی کے بظاہر تو کوئی آثار نہیں آ رہے اور اعلیٰ ذرائع کے مطابق یہی سیٹ اپ بحال رکھا جائے گا لیکن ضمنی الیکشن کے بعد پیالی میں طوفان ضرور برپا ہے۔ کچھ ذرائع کا یہ کہنا ہے کہ سردار غلام عباس کو سینٹ میں ایڈجسٹ کیا جائے گا اگر سردار غلام عباس کو این اے ساٹھ کا ٹکٹ دیا گیا تو اس سے مسلم لیگ ن شدید مشکلات کا سامنا کرناپڑے گا۔ مسلم لیگ ن کی اتحادی تحریک خدام اہلسنت والجماعت اور دیگر مذہبی جماعتیں سردار غلام عباس کی مخالفت میں فرنٹ لائن پر ہوگی۔ 85ء سے 2018ء تک کا مسلم لیگی اینٹی سردار ووٹ کسی صورت میں بھی سردار غلام عباس خان کو نہیں ملے گا۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ پی ٹی آئی اس ایشو پر اپنی حکمت عملی ترتیب دے رہی ہے اور چند روز قبل پی ٹی آئی کی صوبائی قیادت کی بھگوال میں چوہدری ایاز امیر سے ملاقات اس سلسلہ کی ایک کڑی ہے میجر(ر) طاہر اقبال کو ٹکٹ ملنے کی صورت میں چوہدری ایاز امیر الیکشن میں حصہ نہیں لیں گے لیکن مسلم لیگ ن اگرسردارغلام عباس کو این اے ساٹھ میں لاتی ہے تو پھر ان کے مدمقابل چوہدری ایاز امیر ہی ہونگے اس سے مسلم لیگ ن میں ایک بہت بڑا ڈینٹ پڑے گا اور مسلم لیگ ن اس سیٹ سے ہاتھ دھونے کے ساتھ ساتھ حلقہ پی پی بیس بھی ان کے ہاتھوں سے نکل سکتا ہے یہ بات بالکل طے ہے کہ مسلم لیگی سردار غلام عباس کو کسی صورت میں ووٹ نہیں دینگے خواہ میاں نواز شریف بھی اس حلقہ میں ڈور ٹو ڈور انتخابی مہم چلائیں اور اسی طرح سردار گروپ کے حامی جن میں اکثریت اینٹی مسلم لیگ ن میں کسی صورت میں بھی میجر(ر) طاہر اقبال کو قبول نہیں کرینگے۔ حالیہ ضمنی الیکشن میں ان جذبات کی بھرپور عکاسی ہوگی جب سردارگروپ کے حامیوں نے گروپ کو خیر آباد کہہ کر مسلم لیگ ن مخالف امیدواروں کی حمایت کا اعلان کیا۔ سردار گروپ اور مسلم لیگ ن نے چوہدری حیدر سلطان کے لیے علیحدہ علیحدہ انتخابی مہم چلائی۔ اعلیٰ قیادت اس صورتحال سے پوری طرح باخبر ہے کیونکہ ضمنی الیکشن میں مانیٹرنگ ٹیموں کو اعلیٰ قیادت کو لمحہ بہ لمحہ صورتحال سے باخبر رکھا۔ یقیناًان حالات کو دیکھتے ہوئے اعلیٰ قیادت ٹکٹوں کے فیصلے کرے گی۔ سابق ضلع ناظم سردار غلام عباس خان کے لیے بدقسمتی یہ ہے کہ حلقہ این اے ساٹھ کی جس وکٹ پر وہ کھیلنا چاہتے ہیں وہ بھی ان کے لیے سازگار ثابت نہیں ہوئی، مسلم لیگ ن کی اعلیٰ قیادت کو سردار غلام عباس خان کے لیے ایسا فیصلہ کرنا ہوگا جس سے وہ مطمئن بھی ہوں اور ان کے حامیوں کی حوصلہ شکنی بھی نہ ہو۔

اظہار تعزیت


دولتالہ(نامہ نگار)ممتاز شاعر، کالم نگار اور ڈرامہ نویس منو بھائی کی وفات پر علمی ادبی تنظیم ؛قلم قبیلہ؛دولتالہ کا ایک تعزیتی اجلاس زیر صدارت ڈاکٹر خالد محمود سرپرست اعلیٰ ؛قلم قبیلہ؛منعقد ہوا جس میں صدر اختر دولتالوی،جنرل سیکرٹری قاسم علی قاسم ،مصور حسین قریشی،ندیم انجم کیانی کے علاوہ دیگر اراکین نے شرکت کی اور منو بھائی کی وفات کو قومی سانحہ قرار دیا،اس موقع پر صبحِ بہاراں کے سرپرست اعلیٰ ڈاکٹر خالد محمود نے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ منو بھائی مرحوم بلند پایہ شاعر و ادیب ہونے کے علاوہ ایک نظریاتی انقلابی انسان تھے، انہوں نے اپنی تحریروں سے دور حاضر کے انسان کے دکھوں اور مسائل کو اجاگر کیا،اور ہمیشہ اصولوں کی پاسداری کی اور انسانیت کی فلاح کے لئے کام کرتے رہے جس کا ثبوت سندس فاؤنڈیشن ہے جس کے منو بھائی تاحیات چیئرمین تھے، آخر میں منو بھائی کی مغفرت اور بلندی درجات کے لئے دعا کی گئی

دولتالہ کے تعلیمی ادارے نے فیڈرل بورڈ میں چوتھی پوزیشن حاصل کرکے منفرد اعزاز اپنے نام کرلیا


دولتالہ(نامہ نگار)دولتالہ کے تعلیمی ادارے نے فیڈرل بورڈ میں چوتھی پوزیشن حاصل کرکے منفرد اعزاز اپنے نام کرلیا ،طلباء ،والدین ،اساتذہ میں خوشی کی لہر ،عوامی حلقوں کی جانب سے داد تحسین ،تفصیلات کے مطابق دولتالہ کے معروف تعلیمی ادارے مانچسٹر انسٹی ٹیوٹ آف ایڈوانس سٹڈیز کے طلباء نے اپنی ذہانت سے فیڈرل بورڈ اسلام آباد میں اس قدر وافر مقدار میں سکالر شپ حاصل کیں کہ اس تعلیمی ادارے کو زیادہ سکالر شپ حاصل کرنے کی کٹییگری میں فیڈرل بورڈ میں چوتھی پوزیشن حاصل ہو گئی ، جس پر سکول کے طلباء و طالبات ان کے والدین ،اساتذہ میں خوشی کے جذبات پائے جا رہے ہیں جبکہ عوامی حلقوں کی جانب سے سکول انتظامیہ ،اساتذہ اور طلباء وطالبات کو داد تحسین پیش کیا جا رہا ہے ،واضح رہے کہ اس تعلیمی ادارے سے میٹرک کی تعلیم حاصل کرنے کے بعد مختلف کالجز میں زیر تعلیم طلباء وطالبات کی اکثریت سکالر شپ حاصل کر رہی ہے

مقامی سکول میں تدریسی ماحول کو خراب کرنے والوں کو کسی صورت میں برداشت نہیں کیا جائے گا


ڈھڈیال(نامہ نگار)قصبہ ڈورے کی سرکردہ شخصیات چوہدری مسرت اقبال ، محمد اشفاق بھٹی ، حاجی نذر کھرل اور اے ڈی خان رگ نے کہا ہے کہ مقامی سکول میں تدریسی ماحول کو خراب کرنے والوں کو کسی صورت میں برداشت نہیں کیا جائے گا۔ ایک مشترکہ بیان میں انہوں نے کہا کہ سکول میں بدانتظامی اوردیگر امور کے بارے میں محکمہ تعلیم کے اعلیٰ افسران کو آگاہ کردیا ہے اور انہوں نے یقین دہانی کرائی ہے کہ سکول کا تعلیمی ماحول خراب کرنے والوں کے خلاف سخت کاروائی کی جائے گی۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک تین رکنی کمیٹی تشکیل دے دی گئی ہے جو سکول کے معاملات پر نظر رکھے گی ۔

ملک نعیم اصغر اعوان کے اعزاز میں اپنی رہائشگاہ پر عصرانہ


ڈھڈیال(نامہ نگار)مسلم لیگ ن چک نورنگ کی سرکردہ شخصیت چوہدر ی رب نواز نے ایم این اے میجر(ر)طاہر اقبال اور ایم این اے سیکرٹریٹ ملک نعیم اصغر اعوان کے اعزاز میں اپنی رہائشگاہ پر عصرانہ دیا جس میں چیئرمین یوسی ہرچار ڈھاب چوہدری ضمیرخان ، چوہدری خضر عباس نوروال، وائس چیئرمین یوسی لنگاہ چوہدری شبیر، چوہدری شان ، چوہدری اعجاز، چوہدری شیراز امین، شکیل جوگی ، چوہدری مالک، چوہدری خرم چک عمرا، تیمور بھٹی جوند، چوہدری شوکت جبیر پور، چوہدری غلام اصغر اور دیگر نے عصرانہ کی دعوت پر چوہدری رب نواز کا شکریہ اداکیا۔

سیاسی مفادات کیلئے کچھ بھی کیا جاسکتاہے


ڈھڈیال(نامہ نگار)مسلم لیگ ن بھکاری کلاں کے سرکردہ رہنما چوہدری ارشد علی خان نے کہا کہ کچھ عرصہ قبل تک میاں نوازشریف اور میاں شہبازشریف کو چور اور ڈاکو کہنے والوں کے منہ سے اب ان کے منہ سے تعزیفیں یہ ثابت کرتی ہیں کہ سیاسی مفادات کیلئے کچھ بھی کیا جاسکتاہے ۔ ایک بیان میں انہوں نے کہا کہ32سال تک مذکورہ گروپ مسلم لیگ کی مخالفت کرتا رہا اور اب مسلم لیگ ن میں شامل ہو کر انتشار کا باعث بن رہا ہے ۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کو اس گروپ سے فائدہ کم اور نقصان زیادہ ہوگا۔ اعلیٰ قیادت کی جانب سے اس گروپ کو مسلم لیگ ن میں شامل کرنے کا فیصلہ مسلم لیگیوں کیلئے ناقابل قبول ہے اور اس سے کارکنوں میں شدید بے چینی ہے۔ مسلم لیگ ن کی قیادت کو اس گروپ کو ابھی لال جھنڈی دکھا دینی چاہیے تاکہ مسلم لیگ ن انتشار سے بچ سکے۔

سکول ڈورے کے ایک ٹیچر کو ہراساں کرنے کے الزام میں معطل کردیا گیا


ڈھڈیال(نامہ نگار)گورنمنٹ بوائز ایلیمنٹری سکول ڈورے کے ایک ٹیچر کو ہراساں کرنے کے الزام میں معطل کردیا گیا ۔ اس سلسلہ میں قصبہ ڈورے کے ایک وفد نے ڈسٹرکٹ ایجوکیشن آفیسر ایلیمنٹری چکوال نصراللہ خان سے ملاقات کی جس میں انہیں سکول میں تعینات محمد عارف نامی ٹیچر کے نامناسب رویہ اور ایک مقامی ٹیچر کوہراساں کرنے کے بارے میں بتایا گیا ۔ ڈی ای او نے مذکورہ وفد کی شکایت کا فوری نوٹس لیتے ہوئے ڈپٹی ڈی ای او کو عارف نامی ٹیچر کے ریکارڈ اور اس کے خلاف جاری انکوائری رپورٹ سمیت طلب کرلیا۔ ڈی ای او نے محمد عارف کو فوری طور معطل کرتے ہوئے وفد کو یقین دلایا کہ سکول میں کسی ایسے واقعہ کو برداشت نہیں کیا جائیگا۔ وفد نے بھرپور تعاون پر ڈی ای او ایلیمنٹری نصراللہ خان کا شکریہ ادا کیا ہے۔

چار سالوں میں اس اسمبلی نے عوام کا حق نمائندگی ادا نہیں کیا،را جہ طا رق کیانی 


گو جر خان(نامہ نگار) پاکستان تحریک انصاف شمالی پنجاب کے سینئر نائب صدر را جہ طا رق کیانی نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی اسمبلیوں سے استعفے دے یا نہ دے یہ طہ ہے کہ گذشتہ ساڑھے چار سالوں میں اس اسمبلی نے عوام کا حق نمائندگی ادا نہیں کیا اور اب تو یہ اتنی بے معنی ہو چکی ہیں کہ ان میں رہنا یا رہنا کو ئی اہمیت نہیں رکھتا ان خیا لات کا اظہار انہوں نے گو جر خان میں کا رکنوں سے خطاب کرتے ہو ئے کیا ۔ انہوں نے کہا کہ مسلم لیگ ن کا دور حکومت جمہو ریت کے ما تھے پر کلنک کا ٹیکہ ہے جسکا سر برا ہ ہر وقت آ زاد عدلیہ کو ہدف تنقید بنا تا ہو اور دیگر اداروں کو ہر وقت مطعون کرے وہ کسی جمہو ریت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ سیاسیات کی کتا بوں میں لکھا ہے کہ سیاسی جماعتوں کے پلیٹ فارم سے لو گ بڑے مقا صد کے لیے جدو جہد کرتے ہیں جس طر ح انگریزوں کے خلاف قائد اعظم نے کہ یا آمریت کے خلاف بھٹو نے کہ ۔ جبکہ ن لیگ کے قائد کی صورتحال یہ ہے کہ جمہو ری دور میں اپنے دور حکومت میں ہی اپو زیشن کا نام نہاد رول ادا کرتے کی کو ششوں میں مصروف ہیں جبکہ جب مشرف نے جمہو ریت پر شب خون مارا تو یہ صاحب این آر او کر کے سعودیہ جا بیٹھے ۔ طا رق کیانی نے کہا کہ اس دور حکومت میں کر پشن کے ریکارڈ تو قائم ہو ئے مگر کو ئی اور کا م نہیں ہوا اس دور میں عمران خان واحد امید کی کرن ہیں جو ملک کو کر پشن اور دیگر بحرانوں سے نکال سکتے ہیں ۔وہ جو بھی فیصلہ کریں گے ملک کے عوام انکے ساتھ ہیں۔

دو ملزمان کو سزائے موت ، ایک کو عمر قید اور ایک کو بری کردیا 

گو جر خان(نامہ نگار)مقامی عدالت نے اقدام قتل کے ایک مقدمہ کا فیصلہ سناتے ہو ئے دو ملزمان کو سزائے موت ، ایک کو عمر قید اور ایک کو بری کردیا ۔ تھانہ گو جر خان میں درج ایف آئی آر کے مطا بق فیصل اور عباس نے ساتھیوں کی مدد سے 2014میں پلینہ کے رہا ئشی ثقلین کو قتل کر دیا تھاْ مقدمہ کی سماعت ایڈیشنل سیشن جج محمد اسلم گو ندل کی عدا لت میں ہو ئی ۔ گو ا ہان کے بیا نات اور وکلا کے دلائل کے بعد ملزمان پر الزام درست ثابت ہو گیا جسکی رو شنی میں عدالت نے فیصل جبار اور محمد عباس کو سزائے موت، یاسر عباس کو عمر قید اور تینوں کو دو دو لاکھ رو پے جر مانہ کی سزا کا حکم سنا یا ۔ جبکہ اسد جبار کو بری کر دیا گیا ۔

فو ڈ اتھارٹی کے اقدا مات کی وجہ سے اس شعبہ میں بہت سی بہتری آئی ہے


گو جر خان(نامہ نگار)گو جر خان کی سول سو سائٹی نے پنجاب فوڈ کنڑول اتھا رٹی کی گو جر خان میں کا روائیوں کو سراہتے ہو ئے انہیں لو گو ں کی جا نوں اور صحت کے خلاف کھیلنے والوں کے خلاف مزید سخت کا روائیاں کر نے کا مطا لبہ کیا ہے ۔ سول سو سائٹی کے ایم کلیم اللہ بھٹی، خوا جہ قیصر فاروق اور خا ور کیانی نے کہا ہے کہ فو ڈ اتھارٹی کے اقدا مات کی وجہ سے اس شعبہ میں بہت سی بہتری آئی ہے اور لو گو ں کو ملا وٹ شدہ مضر صحت اشیائے صرف سے کسی حد تک نجات ملی ہے اور صفائی کا معیار بہتر ہوا ہے مگر ابھی بہت کچھ کر نا با قی ہے کیو نکہ جن لو گو ں کو اشیائے صرف کی اشیا میں ملا وٹ کی لت پڑ چکی ہے وہ آ سا نی سے با ز آنے والے نہیں ہیں یہ پنجاب فوڈ اتھا رٹی ہی ہے جسکی وجہ سے جان لیوا بند ڈبوں کے دو دھ، منرل واٹر کے نام پر مضر صحت پا نی کی فراہمی ، چائے پتی میں برادے کی ملا وٹ اور کا رخانوں کی اندورنی صورتحال کا پتہ چلا سول سو سائٹی کے ان را ہنماؤں نے کہا کہ اسکے ساتھ ساتھ تا جر تنظیموں کی شکا یا ت کا جائزہ لینے میں بھی موئی مضائقہ نہیں ہے اگر کا رخانے دالیں رنگتے ہیں تو عام دو کا نداروں کی بجائے کا رخانوں کی اس کا م سے باز رکھا جا ئے اس سے بہتر نتائج نکل سکتے ہیں ؂

بلدیہ گو جر خان کی طرف سے 55لاکھ رو پے کی رقم ایک غیر قانونی منصو بے پر لگا نے کی کو شش نا کا م


گو جر خان(نامہ نگار)ایک اپو زیشن کو نسلر کی کو ششوں سے بلدیہ گو جر خان کی طرف سے 55لاکھ رو پے کی رقم ایک غیر قانونی منصو بے پر لگا نے کی کو شش نا کا م بنا دی گئی ۔ بلدیہ گو جر خان میں ایک تجویز پیش کی گئی کہ قاضیاں روڈ پر ایک ایسی جگہ پر 55لاکھ رو پے کی لا گت سے چار دیواری تعمیر کی جا ئے لیز پر ہے اور جس پر چا ر دیواری تعمیر کر نے کی کو ئی ضرورت ہے اور نہ ہی اسکا کو ئی فا ئدہ ہے ۔ اپو زیشن کو نسلر شہزا دہ خان نے اسکی بھر پور مخالفت کرتے ہو ئے کہا کہ یہ سرا سر غیر قانونی منصو بہ ہے جسکا کل سب کو جواب دینا پڑے گا ۔ انکی اس مخالفت سے یہ منصو بہ تر ک کر دیا گیا ۔جسے چئیرمین بلدیہ بھی ضروری قرار دے چکے تھے ۔

error: